ریس لگانے والوں کی گاڑیاں نیلام کرنے کا اعلان

1 month ago 39

گاڑی نیلام

ویانا : آسٹریا حکومت نے متنبہ کیا ہے کہ تیز رفتاری کے مرتکب ڈرائیوروں کی کاروں کو ضبط کرکے نیلام کردیا جائے گا، اس اقدام کا مقصد کار ریس لگانے والوں کی حوصلہ شکنی کرنا ہے۔

اس حوالے سے مقامی حکام کا کہنا ہے کہ وہ ریاست میں غیرقانونی اسٹریٹ ریس اور انتہائی تیز رفتاری کے کے باعث ہونے والے ٹریفک حادثات اور دیگر واقعات پر قابو پانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

حکام کے مطابق کار ریسنگ کے واقعات نہ صرف نوجون ڈرائیوروں کی موت کا سبب بنتے ہیں بلکہ بعض اوقات بے گناہ راہگیر بھی گاڑیوں کی زد میں آکر زخمی ہوجاتے ہیں۔

گرینز کے ٹرانسپورٹ منسٹر لیونور گیوسلر نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ریس لگانے والی گاڑیاں بے قابو ہتھیار اور معصوم لوگوں کے لیے جان کا خطرہ بن جاتی ہیں۔

انہوں نے واضح کیا کہ اگر کسی بھی شہری کو مقررہ حد رفتار سے زیادہ گاڑی چلاتے ہوئے پکڑا گیا تو قانون کے مطابق دو ہفتوں تک اس کی گاڑی کو بحق سرکار ضبط کر لیا جائے گا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ مذکورہ شہری اگر دوبارہ اسی جرم کا ارتکاب کرتے ہوئے قانون کی گرفت میں آیا تو اس کی گاڑی کو سرکاری تحویل میں لے کر نیلام کردیا جائے گا۔

انہوں نے واضح کیا کہ ضبط شدہ کاروں کی نیلامی کے بعد اس کی رقم کا 70 فیصد حصہ روڈ سیفٹی فنڈ اور 30​​فیصد متعلقہ مقامی اتھارٹی کو دیا جائے گا، ضبط شدہ گاڑی کا جرمانہ اس کے علاوہ ہے۔

Comments

Read Entire Article