پولیس افسران سے بدتمیزی : مسلم لیگ ن کے رہنما عطا تارڑ کی ضمانت منظور

1 month ago 61

گوجرانوالہ : عدالت نے سینئر پولیس افسران سے بدتمیزی  کے مقدمے میں مسلم لیگ ن کے رہنما عطا تارڑ کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے  30 ہزار کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیرآباد میں مسلم لیگ ن کے رہنما عطا تارڑ کو سینئر پولیس افسران سےبدتمیزی اور وردی پرہاتھ ڈالنےکی کوشش کے مقدمے میں عدالت میں پیش کیا گیا، عدالت پیشی کے موقع پر پولیس کی طرف سے سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

عدالت نے لیگی رہنما عطا تارڑ اور تین کارکنوں کی ضمانت تیس تیس ہزار کے مچلکوں کے عوض منظور کرلی گئی۔

بعد ازاں مسلم لیگ ن کے رہنما عطا تارڑ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہمیں مذاکرات کےلئے بلا کرگرفتارکر لیا گیا، پولیس گردی کی بدترین مثال ہے، پولیس کوسیاسی آلہ کار کیلئے استعمال کیا جاتا ہے، ایسےاوچھے ہتھکنڈوں سے ہمارا عزم بڑھے گا۔

عطا تارڑ کا کہنا تھا کہ مقدمےمیں 3ناقابل ضمانت دفعات تھیں، 16ایم پی او لگائی گئی جس میں 3ماہ کی نظر بندی ہوتی ہے، عدالت میں تینوں دفعات ڈیلیٹ ہوئیں اب چالان پیش ہو گا۔

ن لیگی رہنما نے مزید کہا کہ سیدھاسیالکوٹ جاؤں گا ایک دن بھی ضائع نہیں کروں گا، پنجاب حکومت نےروکنےکی کوشش کی تونتائج کی ذمہ دارہو گی، اب زبان بندی نہیں ہو گی اب زیادہ چلے گی ، پی ٹی آئی کے کرائے کے ترجمان تیار ہو جائیں ،میں آ رہا ہوں۔

Comments

Read Entire Article