غذائیت کی کمی اور امراض، تھرپارکر میں‌ موت کا رقص جاری

6 months ago 101

Sindh

تھرپارکر: غذائیت کی کمی اور امراض کے سبب تھرپارکر میں‌ موت کا رقص جاری ہے۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ سندھ کے ضلع تھرپارکر میں غذائیت کی کمی اور امراض سے کے باعث بچوں کی اموات کا سلسلہ جاری ہے، سول اسپتال مٹھی میں آج بھی 3 بچیاں انتقال کر گئیں۔

اسپتال ذرائع کا کہنا ہے کہ تھرپارکر میں رواں سال بچوں کی اموات کی تعداد 619 ہو گئی ہے، تھر کے سرکاری اسپتالوں میں ادویات و عملے کی قلت بھی برقرار ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ تھرپارکر کے مختلف سرکاری اسپتالوں پر تعینات ڈاکٹرز بھی ڈیوٹیوں سے غائب ہیں، مختلف گائناکالوجسٹس سمیت دیگر ڈاکٹرز بھی حیدرآباد اور کراچی میں مقیم ہیں۔

ریکارڈ کی حاضری کے لیے تھر پہنچ کر حاضری لگانے کا انکشاف ہوا ہے، ادھر سیکریٹری صحت سندھ نے غیر حاضر 6 ڈاکٹرز کو معطل کر دیا ہے۔

یاد رہے کہ سپریم کورٹ کے احکامات پر سیکریٹری محکمہ صحت سندھ نے عمل درآمد کرتے ہوئے تھر میں ڈاکٹروں کی کمی پوری کرنے کے لیے 36 ڈاکٹرز کا ٹرانسفر نوٹیفکیشن جاری ہفتے کو جاری کیا تھا۔

تھر میں صحت کے مراکز پر ڈاکٹرز کو فوری ڈیوٹیز جوائن کرنے کی ہدایات کی گئیں، سیکریٹری صحت سندھ کی جانب سے تنبیہ بھی کی گئی کہ تھر میں غیر حاضر ڈاکٹرز کے خلاف تادیبی کارروائی ہوگی۔

Comments

Read Entire Article