پاکستانی ڈاکٹرز کا کارنامہ، بچے کے کٹے ہوئے ہاتھ جوڑدیئے

4 days ago 14

پاکستانی ڈاکٹرز نے سرجری کی دنیا میں بڑا کارنامہ انجام دیدیا، پانچ سالہ بچے کے کٹے ہوئے دونوں ہاتھ دوبارہ جوڑ دیئے۔

پنجاب کے علاقے دیپالپور کے ایک 5 سالہ بچے کاشف کے دونوں ہاتھ ایک ماہ قبل چارہ کاٹنے والی مشین میں آکر کٹ گئے تھے۔

بچے کو پہلے دیپالپور میں ہی بیسک ہیلتھ یونٹ لے جایا گیا جہاں سے ڈاکٹرز نے اسے اوکاڑہ ریفر کیا گیا، بچے کو وہاں سے لاہور کے چلڈرن اسپتال لایا گیا جہاں ڈاکٹر اسلم راؤ کی سربراہی میں پلاسٹک سرجنز نے بچے کے کٹے ہوئے دونوں ہاتھ دوبارہ جوڑ دیئے۔

رپورٹ کے مطابق ڈکٹر اسلم راؤ کی سربراہی میں پلاسٹک سرجنز نے 12 گھنٹے طویل سرجری کی۔ پلاسٹک سرجن ڈاکٹر اسل راؤ کا کہنا ہے کہ بچے کے ہاتھ حرکت کرنے لگے ہیں تاہم آئندہ 6 ماہ تک کاشف کی فزیو تھراپی جاری رہے گی۔

ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ بچہ ٹریٹمنٹ کے بعد 90 فیصد تک عام انسان کی طرح اپنے ہاتھوں کو استعمال کرسکے گا۔

WhatsApp FaceBook

Read Entire Article