سعودی عرب نے پاکستان سمیت دیگر ممالک پرعائد سفری پابندیاں‌ ختم کرنے کا اعلان کردیا

4 days ago 8

ریاض: سعودی عرب نے پاکستان، برازیل، ویتنام سمیت دیگر ممالک پر عائد فضائی سفری پابندیاں ختم کرنے کا اعلان کردیا۔

سعودی گیزیٹ کی رپورٹ کے مطابق  سعودی حکومت نے جمعرات کے روز مختلف ممالک پر عائد سفری پابندیوں کو ختم کرنے کا اعلان کیا ہے۔

سفری پابندی ختم ہونے کے بعد یکم دسمبر سے پاکستان، انڈونیشیا، برازیل، ویتنام، مصر اور بھارت سے مسافر براہ راست سعودی عرب جاسکیں گے۔

#BREAKING: #SaudiArabia allows direct entry of travelers from Indonesia, Pakistan, Brazil, Vietnam, Egypt and India starting from next Wednesday December 1, 2021 pic.twitter.com/tYi6FwsRgw

— Saudi Gazette (@Saudi_Gazette) November 25, 2021

وزارتِ داخلہ کے مطابق مسافروں کو اپنی کرونا ویکسی نیشن کی تفصیلات پہلے سے فراہم کرنا ہوں گی جبکہ سعودی عرب کی جانب سے منظور کی جانے والی ویکسین کی بوسٹر ڈوز بھی لگوانی ہوگی۔

ذرائع کے مطابق سعودی عرب پہنچنے کے بعد مسافروں کو پانچ روز قرنطینہ میں گزارنے ہوں گے جبکہ روانگی سے 72 گھنٹے قبل کی پی سی آر  رپورٹ دکھانی ہوگی۔

اعتباراً من الساعة الواحدة من صباح يوم الأربعاء الموافق 01 / 12 / 2021م ، السماح بالقدوم المباشر إلى المملكة من (6) دول دون الحاجة إلى قضاء (14) يومًا خارجها مع تطبيق الحجر الصحي المؤسسي لمدة (5) أيام. pic.twitter.com/NWaZojzP5n

— وزارة الداخلية (@MOISaudiArabia) November 25, 2021

اس سے قبل پاکستان، انڈیا، انڈونیشیا، برازیل، مصر اور ویتنام سے آنے والوں کو اب کسی دوسرے ملک میں 14 دن قیام کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی اور وہ براہ راست سعودی عرب کا سفر کر سکیں گے۔

دوسری جانب فضائی سفری پابندی ختم ہونے کے بعد مذکورہ ممالک پر عائد عمرہ پابندی بھی ختم ہوجائے گی،  انڈونیشیا، پاکستان، بھارت کے زائرین کو آئندہ ماہ سے عمرہ ادائیگی کی اجازت بھی ہوگی۔

BREAKING | Umrah Resumes for largest pilgrim sending countries, Indonesia, Pakistan and India starting next month

— Haramain Sharifain (@hsharifain) November 25, 2021

یاد رہے کہ سعودی حکومت نے کرونا کے پیش نظر مختلف ممالک پر سفری پابندیاں عائد کیں تھیں، جس کے بعد نظر ثانی کر کے کچھ ممالک پر عائد پابندیوں کو ختم کردیا گیا تھا جبکہ مذکورہ ممالک سے براہ راست پروازوں پر پابندی برقرار تھی۔

Comments

Read Entire Article